TAZEEN AKHTAR

عمران بھول رہے ہیں کہ

(تزئین اختر ) تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے وفاقی حکومت کے خلاف لانگ مارچ اور مطالبات کی منظوری تک دھرنے کا اعلان تو کر دیا ہے مگر وہ انتہائی اہم بات نظر انداز کر رہے ہیں سیاستدان پہلے بات کرتے ہیں عمران خان نے اب تک کی ہی نہیں اور حکومت کی پیشکش کا جواب بھی وہ جس انداز سے انکار میں دے رہے ہیں یہ دونوں باتیں ان کے لئے مناسب نہیں اور ان دونوں باتوں کا نقصان صرف اور صرف ان کی ذات کو پہنچنے والا ہے

7 براعظموں میں 7 بلند ترین چوٹیاں سر کر کے دنیا میں پہلی مثال قائم کرنے والے ثمینہ بیگ اور علی مرزا کو دفتر خارجہ کے حکام شاباش پر ٹرخا کر چل دیئے

اسلام آباد (تزئین اختر) وزیر خارجہ کے منصب والے مشیر خارجہ سرتاج عزیز ، سیکرٹری خارجہ اعزاز احمد چوہدری اور ڈائریکٹر جنرل فارن آفس عزیز دانش پر مشتمل ہمارے دفتر خارجہ کے اعلیٰ ترین حکام کی ٹیم 7 براعظموں میں 7 بلند ترین چوٹیاں سر کر کے دنیا میں پہلی مثال قائم کر کے پاکستان کا نام روشن کرنے والے بہن بھائی ثمینہ بیگ اور علی مرزا کو صرف شاباش پر ٹرخا کر اپنے اپنے گھروں کو چل دیئے ۔ ایڈیٹرتزئین اختر نے سیکرٹری خارجہ اعزاز چوہدری کو مخاطب کر کے توجہ دلائی جس پر انہوں نے کوشش کرنے کی حامی بھر لی اور بہن بھائی کو اپ

طاہرالقادری لہجہ اور اورعمران طریقہ درست کریں

 تز ئین ا ختر --------رمضان کے آخری عشرے نظریہ پاکستان کونسل کے ہاں فلسطینی سفیرولید ابوعلی غزہ پراسرائیلی حملوں کے متعلق بات کررہے تھے ۔ان کاکہناتھاکہ’’اسرائیل نے حملوں کے لئے سوچ سمجھ کر یہ وقت منتخب کیاہے کیونکہ دنیاکی تمام مقتدرقوتیں اس وقت کسی نہ کسی مسئلے میں الجھی ہوئی ہیں مثلاً امریکہ افغانستان میں الجھاہواہے روس اوریورپ نے یوکرین میں سینگ پھنسارکھے ہیں عرب ممالک بھی اپنے اپنے مسائل میں غلطاں ہیں۔ ہماری آوازکون سنے گا؟

کیا ہمارے بڑوں نے تماشہ نہیں لگا رکھا؟

پیپلز پارٹی کی رہنما شہلا رضا نے اگلے روز جیو نیوز میں گفتگو کرتے ہوئے بڑا دھماکہ کر دیا ، ان سے قبل ابھی یوسف رضا گیلانی کے بیان پر پیپلز پارٹی کے اندر لے دے ہو رہی تھی اور تردیدوں پر تردیدیں آ رہی تھیں کہ شہلا رضا نے سابق وزیراعظم کی بات کو مزید آگے بڑھا دیا اور اب شعبہ ہے کہ شہلا رضا سے وضاحت طلب کر لی گئی ہے یوسف رضا گیلانی نے گزشتہ دنوں بیان دیا تھا کہ سابق صدر جنرل مشرف نے استعفیٰ ڈیل کے تحت دیا تھا اور یہ ڈیل پیپلز پارٹی کے ساتھ ہوئی تھی کہ ان کے خلاف مقدمات نہیں چلائے جائیں گے ان کے بیان پر پی پی کے ترجمان فرحت اللہ بابر اور سینئر رہنما رضا ربانی نے واضح طور پر تردید کی اور موقف اخت

یا رہ مئی خیریت سے گزرگیا۔آگے بھی اللہ بہترکرے گا ۔بشرطیکہ سب اپنی اپنی حدمیں رہیں

۔۔۔۔۔۔تزئین ا ختر۔۔۔۔۔۔ عمران خان کاجلسہ ہوگیا ۔خداکاشکرہے کہ یہ جلسہ پرامن ہوگیااورملک میں کہیں بھی اس سیاسی سرگرمی کے دورا ن کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا اوردہشتگردی سے بھی سب محفوظ رہے۔پشاورمیں دھماکہ ہوا مگریہ احتجاجی کارکنوں میںیاکسی جلسہ میں نہیں ہوا۔پاکستان تحریک انصاف نے پہلے اس احتجاج کو سونامی کانام دیاتھا ۔ دھرنے کا لفظ بھی استعمال ہوتارہا اورپھرپہلے دونوں لفظ رہ گئے اور جلسے کالفظ استعمال ہونے لگا۔اب عمران خان نے فیصل آباد میں جلسے کااعلان کردیاہے ۔وہ کتنابڑاہوگا اورکیااسے سونامی کہاجاسکے گا یہ توآنے والاوقت ہی بتائے گا مگرڈی چوک اسلام آبادوالاجلسہ سونامی نہیں بن سکا۔ہاں اس

میاں برادران کی مقبولیت کا سروے۔کیا اس ٹائمنگ کی کوئی خاص اہمیت ہے؟

قومی سیاسی جماعتوں کی مقبولیت کا ایک اور سروے آ گیا ہے۔گیلپ سروے نے نوازشریف کو پسندیدہ ترین قومی لیڈر قرار دیا ہے جبکہ شہبازشریف کی کارکردگی وزرائے اعلیٰ میں سب سے بہتر قرار دی ہے۔عمران خان کی مقبولیت میں کمی بتائی ہے اور آصف علی زرداری تو اب ویسے بھی کچھ عرصہ کیلئے قومی منظر سے دور ہو گئے ہیں۔ان کی سابقہ حکومت کی کارکردگی موجودہ حکومت سے کم تر بتائی ہے۔اس سروے میں نئی بات یہ ہے کہ پہلی بار اداروں کی بھی بات کی گئی ہے۔پاک فوج کی کارکردگی میں 49%اضافہ ہوا جبکہ سپریم کورٹ کی کارکردگی کم ہوئی ہے۔ظاہر ہے چیف جسٹس افتخار کے بعد کچھ تو فرق پڑے گا۔

سیاست ہرعام آدمی کا حق ۔۔۔۔عام آدمی پارٹی پاکستان

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ تزئین اختر۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ عام آدمی پارٹی پاکستان ،سیاست ہرعام آدمی کا حق ہے، کے نعرے کے ساتھ میدان میں آئی ہے۔ عام آدمی کے ووٹ کی طاقت سے اقتدار کے ایوانوں تک پہنچنے والے 65سال سے انہیں دھوکہ دے رہے ہیں۔ انہوں نے سیاست کو شجرِ ممنوعہ بناکر عام آدمی کو صرف نعرے لگانے اور جلسے بھرنے پر لگادیاہے جبکہ خودیہ نام نہاد لیڈر موجیں اڑارہے ہیں۔ اگر سیاست بُری چیز ہے تو یہ لوگ خود کیوں نہیں چھوڑ دیتے ۔غریب آدمی کے لئے سیاست کومہنگا اوربُرا بنانا ان کی سازش ہے۔ ہم سیاست کوان کے چنگل سے نکال کر اچھا اورسستا بنائیں گے تاکہ عام آدمی اپنی تقدیر کے فیصلے خو دکر سکے۔ ان خیالات کااظہار عام آدم

جس ایوان میں شراب ساز فیکٹریوں کے مالک بیٹھے ہوں وہ شراب پینے والوں کے خلاف کارروائی کس طرح کرے گا

اسلام آباد( محمد تزئین اختر)قومی اسمبلی کے آزادرکن جمشید دستی آج اجلاس میں سپیکر ایاز صادق گو پارلیمنٹ لاجز میں شراب وشباب کی محفلوں کے ثبوت پیش کرنے والے ہیں۔پورے ملک کی اوپرکی سانس اوپرنیچے کی نیچے رکی ہوئی ہے کہ آج جب ثبوت پیش ہوں گے تو کیا ہوگا؟جمشید دستی کے ثبوت قومی اسمبلی اورسینٹ کے کس کس معزز رکن کو بے نقاب کریں گے؟ اورپھر ان کے ساتھ کیا سلوک ہوگا؟ لوگ بڑے بے چین ہیں یہ جاننے کے لئے۔ اوراگر ثبوت پیش نہ کئے یا مسترد کردئیے گئے تو پھر جمشید دستی کے ساتھ کیاسلوک ہوگا؟

Pages

Subscribe to RSS - TAZEEN AKHTAR