TAZEEN AKHTAR

انسائیٹ ود سدرہ اقبال‘‘ ۔پی ٹی وی نیوز پروگرام ۔ پی ٹی آئی اورحکومت کی کشتی ختم نہ ہوئی تو کوئی تیسرا آ کر برابر چھڑوا دے گا ۔ تزئین اختر

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن کے رہنماؤں نے پی ٹی آئی کی طرف سے شہروں کو بند کرنے کی مذمت کی ہے اور کہا ہے کہ وہ بامقصد مذاکرات کی طرف آئیں کیونکہ دھرنوں اور شہروں کو بند کر کے وہ کوئی قومی خدمت سر انجام نہیں دے رہے ۔ دوسری طرف پی ٹی آئی کے نمائندے نے کہا کہ حکومت دھاندلی کی تحقیقات کرا دیتی تو بات یہاں تک نہ پہنچتی۔

پریس کانفرنسیں چھوڑیں،اب فیصلے کریں

8دسمبرکے کالم میں لکھاتھا کہ شہربندہوناایک بات ہے مگرخدشہ اس بات کا ہے کہ شہرمیں سوگ نہ ہوجائے اوروہی ہواجس کاڈرتھا ۔23سالہ نوجوان جسے پی ٹی آئی اپناکارکن بتارہی ہے جان سے گیااورجس شخص کی گول کاوہ نشانہ بناپہلے اسے راناثناء اللہ کاآدمی بتایاگیامگربعد ازاں راناثناء اللہ نے اس سے لاتعلقی ظاہرکردی جبکہ زعیم قادری کاکہناتھاکہ وہ کسی کالعدم تحریک کاکارکن ہے۔اس کامطلب ہے کہ حکام نے اس کی شناخت کرلی ہے جوہونی بھی چاہیے تھی کیونکہ اس کی واضح فلم میڈیا پرچل رہی تھی ۔پرویزرشید نے پریس کانفرنس میں اس شخص کی گرفتاری اورمقدمہ چلانے کایقین دلایا جبکہ وزیراعلیٰ اوروزیراعظم نے

یہ بِلاَّ کون ہے ۔اوراب بھیڑیاکون ہے؟

30نومبرکے ساتھ بھی وہی ہواجوہوناتھا۔جو14اگست کے ساتھ ہواتھا۔اوراب کپتان نے16دسمبر کی تاریخ دی ہے کہ اس روزپاکستان بندکردیں گے۔جی ہاں16دسمبر۔ وہ تاریخ جب 1971ء میں پاکستان دولخت ہواتھا۔ڈھاکہ پلٹن میدان میں پاک فوج کے جنرل نیازی عرف ٹائیگرنے جنرل اروڑہ کے سامنے ہتھیارڈالے تھے۔کیایہ اتفاق ہے کہ16دسمبر1971 ؁ء کوبھی پاکستان کو ایک نیازی درپیش تھااور16دسمبر2014کوبھی پاکستان میں ایک نیازی چھایاہوگا۔حالات بھی کچھ مختلف نہیں۔71ء میں بھی ملک سیاسی افراتفری اورایجی ٹیشن کاشکارہوکرسقوط ڈھاکہ تک پہنچاتھااوراب بھی ملک میں سیاسی تصادم اس حدتک جاپہنچاہے کہ ملک کو بندکرنے کی با

اور تبدیلی آگئی

رائے عامہ    -------   تزئین اختر

دھرنوں سے پیداہونے والاسیاسی بھونچال اب آفٹرشاکس کے بعداپنے خاتمے کی جانب گامزن ہے جیساکہ ہم نے اپنے کالموں میں13اگست سے لکھناشروع کردیاتھا کیونکہ جن لوگوں نے اورجس اندازمیں یہ کام شروع کیاگیاتھااس کی کوئی منزل نظرنہیں آرہی تھی اوراسی لئے ہم نے لکھاتھاکہ ’’14اگست کے بعد15اگست ہوگااوراس کے علاوہ کچھ نہیں ہوگا۔نہ حکومت کہیں جائے گی نہ وزیراعظم گھرجائے گا‘‘اس وقت ڈاکٹرطاہرالقادری اورعمران خان 31اگست کوحکومت کے خاتمے کی باتیں کررہے تھے

منیجنگ ڈائریکٹر پی ٹی وی محمدمالک نے2ارب روپے قرضہ کامطالبہ کردیا

اسلام آباد(تزئین اختر)پاکستان ٹیلی ویژن کے منیجنگ ڈائریکٹرمحمدمالک نے پی ٹی وی کی حالت بہتربنانے کے لئے2ارب روپے کاقرضہ حاصل کرنے کی کوششیں شروع کردی ہیں جبکہ دوسری طرف بھاری معاوضے پر3چیف آپریٹنگ افسروں کولانے پربھی کام کررہے ہیں ۔بورڈآف ڈائریکٹرزنے قرضہ کی منظوری دینے سے صاف انکارکردیا۔تفصیلات کے مطابق محمدمالک نے23اکتوبرجمعرات کومنعقدہ بورڈآف ڈائریکٹرزکے اجلاس میں2ارب روپے قرضہ لینے کی تجویزپیش کردی جس پربورڈکے ارکان حیران پریشان رہ گئے۔

Subscribe to RSS - TAZEEN AKHTAR