TAZEEN AKHTAR

یہ بِلاَّ کون ہے ۔اوراب بھیڑیاکون ہے؟

30نومبرکے ساتھ بھی وہی ہواجوہوناتھا۔جو14اگست کے ساتھ ہواتھا۔اوراب کپتان نے16دسمبر کی تاریخ دی ہے کہ اس روزپاکستان بندکردیں گے۔جی ہاں16دسمبر۔ وہ تاریخ جب 1971ء میں پاکستان دولخت ہواتھا۔ڈھاکہ پلٹن میدان میں پاک فوج کے جنرل نیازی عرف ٹائیگرنے جنرل اروڑہ کے سامنے ہتھیارڈالے تھے۔کیایہ اتفاق ہے کہ16دسمبر1971 ؁ء کوبھی پاکستان کو ایک نیازی درپیش تھااور16دسمبر2014کوبھی پاکستان میں ایک نیازی چھایاہوگا۔حالات بھی کچھ مختلف نہیں۔71ء میں بھی ملک سیاسی افراتفری اورایجی ٹیشن کاشکارہوکرسقوط ڈھاکہ تک پہنچاتھااوراب بھی ملک میں سیاسی تصادم اس حدتک جاپہنچاہے کہ ملک کو بندکرنے کی با

اور تبدیلی آگئی

رائے عامہ    -------   تزئین اختر

دھرنوں سے پیداہونے والاسیاسی بھونچال اب آفٹرشاکس کے بعداپنے خاتمے کی جانب گامزن ہے جیساکہ ہم نے اپنے کالموں میں13اگست سے لکھناشروع کردیاتھا کیونکہ جن لوگوں نے اورجس اندازمیں یہ کام شروع کیاگیاتھااس کی کوئی منزل نظرنہیں آرہی تھی اوراسی لئے ہم نے لکھاتھاکہ ’’14اگست کے بعد15اگست ہوگااوراس کے علاوہ کچھ نہیں ہوگا۔نہ حکومت کہیں جائے گی نہ وزیراعظم گھرجائے گا‘‘اس وقت ڈاکٹرطاہرالقادری اورعمران خان 31اگست کوحکومت کے خاتمے کی باتیں کررہے تھے

منیجنگ ڈائریکٹر پی ٹی وی محمدمالک نے2ارب روپے قرضہ کامطالبہ کردیا

اسلام آباد(تزئین اختر)پاکستان ٹیلی ویژن کے منیجنگ ڈائریکٹرمحمدمالک نے پی ٹی وی کی حالت بہتربنانے کے لئے2ارب روپے کاقرضہ حاصل کرنے کی کوششیں شروع کردی ہیں جبکہ دوسری طرف بھاری معاوضے پر3چیف آپریٹنگ افسروں کولانے پربھی کام کررہے ہیں ۔بورڈآف ڈائریکٹرزنے قرضہ کی منظوری دینے سے صاف انکارکردیا۔تفصیلات کے مطابق محمدمالک نے23اکتوبرجمعرات کومنعقدہ بورڈآف ڈائریکٹرزکے اجلاس میں2ارب روپے قرضہ لینے کی تجویزپیش کردی جس پربورڈکے ارکان حیران پریشان رہ گئے۔

وزیراعظم کے پاس 4دن ؟

رائے عامہ۔تزئین اختر۔

اوئےطوئے۔الزام خان ۔انتشارقادری،فرق کیا ہوا؟

نظریہ پاکستان کونسل میں\"موجودہ حالات میں آزادئ اظہار کے تقاضے\" پر فریدا للہ خان کی صدارت میں نشست

تقریباتِ آزادی کے سلسلہ میں دانشوروں کے مابین مکالمے کی خصوصی نشست ایوانِ قائد فاطمہ جناح پارک میں نظریہ پاکستان کونسل کے ماہانہ فکری وادبی پروگرام نقطہ نظر کے تحت منعقد ہوئی ۔موجودہ حالات میں آزادئ اظہار کے تقاضے\" کے فکر انگیز موضوع پر منعقدہ اس نشست کی صدارت معروف دانشور، سیکرٹری کیپٹل ایڈمنسٹریشن اینڈ ڈویلپمنٹ ڈویژن فریدا للہ خان نے کی ۔کونسل کے نمائندہ انجم خلیق نے ادارے کا اجمالی تعارف پیش کرتے ہوئے کہا کہ نقطۂ نظر کے تحت دانشوروں کو تبادلہ خیال کیلئے ایک مثبت اور تعمیری پلیٹ فارم فراہم کیا گیا ہے۔

Pages

Subscribe to RSS - TAZEEN AKHTAR