یو ایس ایڈ کا پندرہ ارب کے پاکستان پرائیوٹ انویسٹمنٹ انیشیٹو پروگرام کا اعلان

Founder Editor Tazeen Akhtar..

اسلا م آباد۔امریکی حکومت تین نجی فنڈز کے ساتھ شراکت میں پاکستان کے فعال چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباری شعبے میں سرمایہ کاری کے لئے لگ بھگ ساڑھے پندرہ ارب روپے سے زائد کے ایک مشترک فنڈ کا انتظام سنبھالے ہوئے ہے۔پاکستان پرائیوٹ انویسٹمنٹ انیشیٹو(پی پی آئی آئی)کے تحت جو امریکی ادارہ برائے بین الاقوامی ترقی (یو ایس ایڈ)کا ایک پروگرام ہے امریکہ ان سرمایہ کاری فنڈز کی سرمایہ کاری کرنے کی مہارت سے مستفید ہورہا ہے، جس سے معاشی نمو میں تیزی آئے گی اوریہ سرمایہ کاروں کے لئے منافع بخش ثابت ہوں گے۔ 



یو ایس ایڈ کے مشن ڈائریکٹر جان گرورک نے اعلان کیا کہ پی پی آئی آئی کے تحت قائم کردہ تمام تینوں نجی ایکویٹی فنڈز سرمایہ کاری کررہے ہیں۔پی پی آئی آئی ابراج پاکستان فنڈ، پاکستان کیٹالسٹ فنڈ اور بولترو گروتھ فنڈ پر مشتمل ہے۔ پیشہ ورانہ انداز میں چلائے جانے والے یہ تینوں سرمایہ کاری فنڈز پاکستان کے تیزی سے ترقی کرتے ہوئے چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباری اداروں کو ایکویٹی سرمایہ فراہم کرتے ہیں۔ یو ایس ایڈ پروگرام نے ہر فنڈ کے لئے دو ارب انچاس کروڑ روپے فراہم کئے ہیں جو مجموعی طور پرساڑھے سات ارب روپے کی رقم بنتی ہے جبکہ تینوں فنڈز میں سے ہر ایک نے یو ایس ایڈ کی فراہم کردہ رقم کے مساوی یا اس سے زیادہ حصہ ڈالا ہے۔یو ایس ایڈ کے مشن ڈائریکٹر جان گرورک نے کہا کہ پی پی آئی آئی ڈیزائن چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباری شعبے کی معاونت کے لئے مقامی سرمایہ کاری فنڈز کے ساتھ اپنی نوعیت کی ایک منفرد شراکت ہے۔ تینوں شراکتی سرما یہ کاری کمپنیوں کے مہیا کردہ فنڈز کے ساتھ پی پی آئی آئی کے تحت چھوٹے اور در میانے درجے کے منتخب کردہ کاروباری اداروں کے لئے ایکویٹی فنانسنگ کی مد میں ساڑھے پندرہ ارب روپے سے زائد کی رقم دستیاب ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ اس سے نجی ایکویٹی کمپنیوں کی پاکستان میں دلچسپی اور یہاں سرمایہ کاری کی قدر کا اندازہ ہوتا ہے۔



تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سیکورٹیزاینڈایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی)کے ایگزیکٹوڈائریکٹرعامرخان نے چھوٹے اوردرمیانے درجے کے کاروباری اداروں کی حوصلہ افزائی کے لئے ایک جدیدطریقہ وضع کرنے پریوایس ایڈسے اظہارتشکرکیااورکہاکہ چھوٹے اوردرمیانے درجے کے کاروباری اداروں کوپاکستان کی معاشی نمواورطویل مدتی استحکام میں کلیدی حیثیت حاصل ہے ۔



پاکستان کیٹالسٹ فنڈ کے سی ای او اسد شفقت نے کہا کہ چھوٹے اور درمیانے درجے کا کاروباری شعبہ پاکستان میں مجموعی ملکی پیداوار میں اضافے اور روزگار کی فراہمی کے لئے ایک بہترین انجن کا کردار ادا کرسکتا ہے۔



بالترو فنڈ کے سی ای او علی سہگل نے کہا کہ پاکستان پرائیوٹ انویسٹمنٹ انیشیٹو نے کامیابی کے ساتھ یو ایس ایڈ کے ترقیاتی مقاصد اور نجی شعبے کے سرمایہ کاروں کے مفادات کا امتزاج پیدا کیا ہے، جس سے آنے والی دہائیوں کے لئے چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباری شعبے کی معاونت کے لئے ایک پائیدار پلیٹ فارم مہیا ہوا ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ یہ پروگرام مستقبل کی سرکاری اور نجی شعبے کی شراکتوں کے لئے ایک مثال ثابت ہوگا۔

09 MARCH 2017