اسلام آباد۔زمین پر قبضے کے لئے خاتون قتل ۔بحریہ ٹاؤن اور ڈی ایچ اے کے2 کرنیلوں نے سیدھے فائر کئے ۔شوہر کا بیان

Founder Editor Tazeen Akhtar..

اسلام آباد (سپیشل رپورٹر)زمین شروع سے جھگڑے اور فساد کی ایک بنیادی وجہ رہی ہے مگر فی زمانہ اس کی وجہ سے انسانیت ہی دم توڑ گئی ہے۔ خاص طور پر ہاؤسنگ سوسائٹیوں کی طرف سے زمین کے حصول کی خاطر جس جس طرح کے غیر انسانی ، غیر اخلاقی ہتھکنڈے اختیار کیے جا رہے ہیں ان کو دیکھ کر محسوس ہوتا ہے کہ نہ اس ملک میں کوئی قائدہ قانون ہے اور نہ ہاؤسنگ سوسائٹیوں کے لوگوں کے اندر کوئی شرم حیا یا انسانیت کی کوئی ایک رمق بھی باقی رہ گئی ہے۔

 

ایسی ہی ایک مثال گزشتہ روز وفاقی دارالحکومت کے علاقہ ماڈل ٹاؤن ہمک میں سامنے آئی جس میں زمین پر قبضے کے لئے ایک خاتون کو 2 بڑی سکیموں کے 2مسلح افراد نے مبینہ طور پر گولی مار کر قتل کر دیا۔مقتولہ کے شوہر کے بیان کے مطابق گولی مارنے والے دونوں افراد کوئی غنڈے نہیں بلکہ ریٹائرڈ کرنل ہیں جن کا تعلق ملک کی دو بڑی ہاؤسنگ سکیموں بحریہ ٹاؤن اور ڈیفنس ہاؤسنگ سوسائٹی یعنی ڈی ایچ اے سے ہے۔ 

 

طارق محمود ولد عبدالرحمن جس کاتعلق گاؤں کنیال ،ماڈل ٹاؤن ہمک سے ہے، اس نے جو ایف آئی آر درج کروائی ہے اس کے مطابق وہ مال مویشی پالتا ہے اور زمینداری کا کام کرتاہے۔25اکتوبر دن ساڑھے تین بجے وہ اس کی بیوی معروف بی بی ،عنصر محمود ولد غضنفر حسین اور عبدالرحمان ولد فتح خان اپنی ملکیتی زمین پرمال مویشی چرا رہے تھے۔اس دوران کرنل ریٹائرڈ وسیم مسلح کلاشنکوف ،کرنل ریٹائرڈ خلیل مسلح کلاشنکوف ،گل زمان مسلح پسٹل 30بور ،بشیر عالم مسلح ڈنڈا ہو کردیگر سولہ سے سترہ مسلح 12بور اور ڈنڈہ بردار نامعلوم لیکن قابل شناخت اشخاص کے ساتھ اس کی زمین میں داخل ہوئے اور بلیڈ لگے ٹریکٹر سے اس کی زمین سے گھاس ختم کرنا شروع کر دی ۔



عنصر محمود نے روکنے کی کوشش کی جس پر بشیر عالم نے اس نے سر پر ڈنڈا مار کر زخمی کر دیا۔مسماۃ معروف بی بی نے شور مچایا تو کرنل ریٹائرڈ وسیم نے اس پر سیدھا فائر کیا جو اس کے پیٹ پر لگا۔کرنل ریٹائرڈ خلیل بحریہ ٹاؤن نے دوسرا فائر کیا جو اس خاتون کی چھاتی پر لگا اور وہ شدید زخمی ہو گئی۔کرنل ریٹائرڈ وسیم وغیر ہ ایک ٹریکٹر ٹرالی جس پر سیمنٹ کے پول اور سامان برائے قبضہ چھوڑ کر فائرنگ کرتے ہوئے بھاگ گئے۔مسماۃ معروف بی بی ہسپتال کے راستے میں ہی دم توڑ گئی ۔



سائل نے الزام لگایا ہے کہ کرنل ریٹائرڈ اعجاز سیکرٹری ڈی ایچ اے لینڈ ڈائریکٹر ،بریگیڈئیر ابراہیم اور حاجی امجد لینڈ ڈائریکٹر بحریہ ٹاؤن کی ایما پر کیا گیا ہے۔وجہ عناد یہ ہے کہ بحریہ اور ڈی ایچ اے انتظامیہ سائل اور اس کے رشتے داروں کی زمین پر قبضہ کرنا چاہتے ہیں۔پولیس نے قبضہ مافیا کے خلاف 447/511,148/149,302/109 ت پ کے تحت مقدمہ درج کر لیا ہے ۔



ایف آئی آر کے مطابق واقعہ اس طرح ہوا ہے ۔ اس حوالے سے بحریہ ٹاؤن اور ڈی ایچ اے کے دونوں کرنیلوں کے پاس بھی اپنی کہانی ہوگی۔یہ کہانی تفتیش میں سامنے آجائے گی اور قارئین کو اس سے بھی آگاہ کیا جائے گا۔ البتہ دونوں ملزم اس سے قبل اپنا موقف دینا چاہیں تو اسے بھی نمایاں شائع کیا جائے گا۔ باقی سچ جھوٹ کا فیصلہ عدالت کا کام ہے اور سچ کی تلاش پولیس کی ڈیوٹی ہے۔ جس نے قتل کیا ہے اس کو بہرحال سزا ملنی چاہیے۔